کم عمر لڑکی سے شادی کا جرم ثابت ہونے پر مجرم کو سزا اور جرمانہ

0

کراچی(ای این این ایس) ماڈل ٹرائل مجسٹریٹ ملیر الطاف حسین تنیو کی عدالت نے کم عمری کی شادی سے متعلق کیس کا فیصلہ سنادیا۔
عدالت نے جرم ثابت ہونے پر ملزم وقار کو ڈھائی سال قید کی سزا سنادی۔عدالت نے ملزم وقار پر دس ہزار روپے جرمانہ بھی عائد کردیا۔
ملزم وقار نے 17 جولائی 2019 کو میری 14 سالہ بیٹی ایمن کو گھر سے اغواء کیا۔ مدعی مقدمہ
میری بیٹی 14 دسمبر 2002 کو پیدا ہوئی ہے مدعی مقدمہ
ملزم وقار نے میری بیٹی کی عمر زیادہ دیکھائے کے لئے جعلی دستاویزات بنوائے مدعی مقدمہ۔
ملزم نے میری بیٹی کی عمر پانچ جون 1999 کرادی تھی مدعی مقدمہ
پولیس نے ملزم کے خلاف اغواء اور کم عمری کی شادی کی دفعات کے تحت مقدمہ درج کیا تھا، ملزم نے لڑکی کی عمر سے متعلق جعلی دستاویزات تیار کرائے، عدالت۔
لڑکی نے عدالت کے سامنے بیان دیا کہ اسکو کسی نے اغواء نہیں کیا لہٰذا اغواء کی دفعات مقدمے سے خارج کردی گئی تھیں: عدالت
عدالت نے ملزم وقار کو کم عمری کی شادی سندھ چائلڈ میری ایکٹ کی خلاف ورزی پر سزا سنائی ہے.
عدالت نے ملزم کی ضمانت خارج کرکہ گرفتار کرنے کا حکم دے دیا.

About Author

Leave A Reply