وانا میں مریضوں کی دیکھ بھال کرنے والا کرونا آئسولیشن وارڈ منتقل

0

وانا(ای این این ایس)جنوبی وزیرستان کے ضلعی ہیڈکوارٹر وانا میں دوسروں کی زندگی بچانے والا شولام ماڈل ہسپتال کا 61 سالہ ملازم فارماسسٹ خو د بھی کرونا وائرس کا مشتبہ مریض قرار دے دیا گیا۔
ان کو ہسپتال کے آئسولیشن وارڈ منتقل کردیا گیا ہے۔ کرونا وائرس کے فوکل پرسن کے مطابق 61 سالہ فارماسسٹ طارق محمود ولد حکیم خان کو مشتبہ مریض کے طور پر ہسپتال کے اندر قائم آئسولیشن وارڈ میں رکھا گیا، اور یہ اس وقت تک سیلف آئسولیشن کی حالت میں رہے گا،جب تک انکے ٹیسٹ کا رزلٹ نہیں آتا۔انہوں نے مزید کہا،کہ مذکورہ مشتبہ مریض کا ٹیسٹ ہم بھیجوا چکے ہیں،اور 36سے لیکر 48گھنٹوں تک انکے منفی یا مثبت رزلٹ آنا متوقع ہے۔دوسری جانب جنوبی وزیرستان خصوصاََ وانا کے لوگوں کی میڈیا تک رسائی کم ہے، اس کے علاوہ لوگوں میں شعور اور آگاہی کا بڑا فقدان ہے،وانا کی اکثر آبادی ناخواندہ ہے جبکہ اسی وجہ سے انہیں کرونا وائرس سے بچنے اور اپنے آپکو محفوظ بنانے کے طریقوں سے مکمل ناواقف ہیں۔دوسری جانب اس جدید ترین دور میں معلومات تک رسائی سے بھی محروم ہے،حکومت کو چاہئے ،کہ وہ اس نازک رور میں پورے ضلع میں نیٹ کی سہولیات فراہم کریں،تاکہ لوگوں کو اس وبا سے باخبر رکھا جاسکے،اس کے علاوہ ضلعی انتظامیہ اور محکمہ صحت کے حکام کو چاہئے، کہ وہ مقامی سطح پر لوگوں کی آگاہی کیلئے ایسی مہم چلائے، کہ ناخواندگی اور جہالت کے باوجود ان کو اس پھیلتی ہوئی وباء کے متعلق معلومات سے بروقت آگاہ کیا جا سکے۔

About Author

Leave A Reply