جنوبی وزیرستان میں مبینہ دھاندلی کے خلاف احتجاج، جلسہ

0

وانا(رپورٹ: مجیب الرحمٰن)جنوبی وزیرستان کے ضلعی ہیڈکوارٹر وانا میں 20 جولائی کو ہونے والے انتخابات میں مبینہ دھاندلی کے خلاف  پی،پی،پی نے رستم بازار وانا میں احتجاجی مظاہرہ کیا۔مظاہرین نے بینرز اور پلے کارڈ اٹھا رکھے تھے جن پر “اگر سلیکشن کرنا تھا،تو الیکشن کا ڈرامہ کیوں رچایا،الیکش کمیشن جواب دو”کے نعرے درج تھے۔

احتجاجی مظاہرین ریلی کی شکل میں امن پوسٹ تک مارچ کرتے ہوئے واپس بازار کے وسط میں اکھٹے ہوکر جلسہ کی شکل اختیار کی،جلسہ سے پیپلزپارٹی جنوبی وزیرستان کے صدر امان اللہ نے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ ہم سمجھ رہے تھےکہ الیکشن ہورہا ہے،اور عوامی رائے کا احترام کیا جائے گا،لیکن ایسا نہیں کیا گیا۔انہوں نے الزام لگایا کہ تاریخ کی بدترین دھاندلی نے نقشہ پلٹا دیا،میں الیکشن کمیشن آف پاکستان سے اپیل کرتا ہوں،کہ عوامی رائے کا احترام کیا جائے،ورنہ اس کے بھیانک نتائج سامنے آئیں گے۔

جلسہ سے پیپلزپارٹی کے نامزد سابقہ امیدوار حلقہ پی،کے 114 عمران مخلص نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تحصیل توئے خلہ میں پولنگ اسٹیشن نمبر60۔62 اور 64 کا کھاتہ کھول دیا جائے  تودودھ کا دودھ پانی کا پانی ہوجائے گا۔انہوں نے کہا کہ ان تینوں پولنگ اسٹیشن پر فنگر پرنٹر چیک کرکے عوامی مینڈیٹ سامنے آجائے گا۔

انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی،عوام طاقت کا سر چشمہ ہے،کے نظریہ پر یقین رکھنے والی جماعت ہے۔ہم کبھی بھی عوامی مینڈیٹ کی توہین نہیں ہونے دیں گے۔

About Author

Leave A Reply