انٹرنیٹ کے متلاشی یا پوڈری؟ وانا والے نیٹ سے محروم

0

وانا(ای این این ایس) جنوبی وزیرستان کے ضلعی ہیڈکوارٹر وانا میں چادر اوڑھے بیٹھے لوگوں کو دیکھ کر آپ کے ذھن میں خیال آئیگا کہ شاید یہ کوئی خاص قسم کے نشہ کرنے والے یا پوڈری ہوں گے
لیکن ہرگز ایسا نہیں، اس میں بڑے اہم قسم کے لوگ ہیں، جو اپنے دوستوں، عزیز واقارب سے انٹرنیٹ کے ذریعے رابطے رکھتے ہیں۔
وانا وزیرستان کے باسی دور جدید میں بھی انٹرنیٹ کی سہولیات سے محروم ہیں، چند ایک کے علاوہ جن کو سرکار نے باقاعدہ سہولت دی ہوئی ہیں، لیکن جن لوگوں کو سرکار نے سہولت نہیں دی انہوں نے بھی نیٹ کی سہولت تک پہنچنے کیلئے خود طریقہ ڈھونڈ لیا ہے۔
وانا سے کچھ لوگ جاکر ایک موبائیل کمپنی کی سیمز بلوچستان کے سنگم پر واقع علاقہ زرملن لے جاتے ہیں، ان کا کہنا ہیں کہ وادی زرملن میں بلوچستان کے موبائل کے ٹاورز کام کرتے ہیں اور وہ یہاں آکر موبائل ڈیٹا کھولتے ہیں تو نیٹ ورک کام شروع کردیتا ہے، جب تک کسی کا پیکیج لگا ہوتا ہے اور ختم نہیں ہوتا تب تک اسی سم کے ذریعے وانا میں بھی انٹرنیٹ کام کرتا رہتا ہے اور وانا کے باسی پھر آرام سے دن کے وقت ستاروں کے جہاں میں چادر اوڑھے ہوئے اپنے پیاروں سے رابطے میں رہتے ہیں۔

موبائل اور انٹرنیٹ یہاں کے باسیوں کا بنیادی حق ہیں، لیکن اب تک ان کو موبائل کی کمزورسروس تو دی گئی ہے، مگر نیٹ کی سہولت سے محروم رکھا گیا ہے۔
وزیراعظم پاکستان عمران خان کے دورہ وانا کے دوران نوجوانوں نے اس کا پرزور مطالبہ کیاتھا، جو تا حال وفا نہ ہوسکا۔

About Author

Leave A Reply