سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس کی سماعت: 7 سال سے رل گئے ہیں، انصاف نہیں ملا: لواحقین - Eye News Network

سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس کی سماعت: 7 سال سے رل گئے ہیں، انصاف نہیں ملا: لواحقین

0

کراچی(ای این این ایس) سانحہ بلدیہ فیکٹری کراچی کو 7 سال بیت گئے، لیکن لواحقین انصاف کی تلاش میں دربدر ہیں۔ مرنے والوں کے اہل خانہ آج بھی غم میں نڈھال ہیں اور اپنے پیاروں کو یاد کرکے آبدیدہ ہو جاتے ہیں۔
بدھ کی صبح سندھ ہائی کورٹ میں سماعت کے موقع پر ان کا کہنا تھا کہ انصاف نہیں ملا، 7 سال کے بعد بھی ہم در بدر ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ تقاریب میں لے جا کر فوٹو بنوائے جاتے ہیں، جبکہ دو سال بعد سب نے آنا چھوڑ دیا۔
انہوں نے کہا کہ نوکریوں اور دیگر مراعات دینے کا کوئی وعدہ اب تک پورا نہیں ہوا۔
ایک متاثر شخص کا کہنا تھا کہ صرف جماعت اسلامی نے ساتھ دیا، ان کے مشکور ہیں، ان کا وکیل اب تک کیس لڑ رہاہے۔ ہمیں انصاف نہیں ملا کس سے فریاد کریں۔
دوسری جانب سانحہ بلدیہ فیکٹری کیس میں ملزم رحمٰن بھولا کے وکیل نے فیکٹری مالکان کا ویڈیو لنک کے ذریعے بیان قلم بند کرنے کے فیصلے کے خلاف اپیل دائر کر رکھی ہے۔
ڈپٹی اٹارنی جنرل کا کہنا تھا کہ اپیل مسترد کی جائے کیونکہ ویڈیو لنک کے ذریعے بیانات کی نظیر موجود ہیں۔
سپریم کورٹ کا حسین نواز کیس میں ویڈیو لنک کا فیصلہ موجود ہے۔
اس موقع پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ پرویز مشرف کیس میں بھی تو ویڈیو لنک کے ذریعے بیان قلمبند کرنے کا فیصلہ ہوا تھا۔
عدالت نے فریقین سے 13 ستمبر کے لیے مزید دلائل طلب کر لیے۔
خیال رہے کہ ویڈیو لنک کا بیان قلمبند کرنے کا فیصلہ انسداد دہشت گردی عدالت نے دیا تھا۔
ایم کیو ایم سے وابستہ ملزم کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ شہر میں امن و امان کی صورتحال کافی بہتر ہے۔ فیکٹری مالکان کو یہاں آکر بیان ریکارڈ کرانا چاہئے۔
یاد رہے کہ عدالت نے ویڈیو لنک کے ذریعے فیکٹری مالکان کا بیان قلم بند کرنے کی درخواست منظور کی تھی اور درخواست اسپیشل پبلک پراسکیوٹر کی جانب سے دائر کی گئی تھی۔

About Author

Leave A Reply