پاکستانی نوجوان کی برطانوی لڑکی سے پسند کم ارینج میرج: ایک دوسرے کو پسند کرنے والے معاذمسعوداورایبی گیل ویلس نے والدین کو بھی راضی کرلیا

0

  

رحیم یارخان (ای این این) رحیم یار خان سے تعلق رکھنے والے پاکستانی طالب علم کی اپنی کلاس فیلو برطانوی طالبہ کے ساتھ محبت کی کہانی کا خوشگوار موڑ، ، پاکستانی مسلم اور انگریز مسیحی خاندانوں میں رشتے داری پر برطانیہ کے شہر آکسفورڈ کی انگریز وایشیائی کمیونٹیز میں خوشی ومسرت کی لہر دوڑ گئی۔

  شیخ زید میڈیکل کالج و ہسپتال رحیم یارخان کے شعبہ پلمونولوجی کے سربراہ پروفیسر ڈاکٹر مسعود الحق اور شعبہ سائیکاٹری کی سابق سربراہ ڈاکٹر خدیجہ مسعود کا صاحبزادہ معاذمسعود گذشتہ روز ایسیکس کےجان ویلس اور مسز ڈان ویلس کی بیٹی ’’ایبی گیل ویلس‘‘ بیاہ لایا۔معاذ مسعود اور ایبی گیل ویلس کالج میں کلاس فیلو تھے جہاں دونوں ایک دوسرے کو پسند کرنے لگے۔

خیال رہے کہ  دونوں کے گھر والے اس ’’بین الاقوامی‘‘ رشتے داری کیلئے ذہنی طور پر تیار نہیں ہو رہے تھے ،آخر کار دونوں نے اپنے اپنے والدین کو منا لیا اور پھر ’’ارینج میرج ‘‘ کے ذریعے دونوں گذشتہ روز شریک حیات بن گئے۔

 اس پسند کی شادی کا دلچسپ پہلو یہ ہے کہ ڈاکٹر معاذ مسعود کے والد ین ڈاکٹر مسعود الحق، ڈاکٹر خدیجہ مسعوداور ماموں اسلام آباد کے سینئر صحافی احمد منصور، ڈاکٹر عظمیٰ احمد کی محبت کی شادیاں بھی ارینج میرجز تھیں، یوں نوجوان ڈاکٹر نے اپنا پیار پانے کیلئے بزرگوں کو منا لینے کی روایت کو آگے بڑھایا۔ پنجاب کے آخری ضلع رحیم یارخان کی پنجابی فیملی سے تعلق رکھنے والے ڈاکٹر معاذ مسعود کے ماموں احمد منصور اور فرسٹ کزن عبدالقدیر کی خیبر پختونخوا کے علاقوں سوات اور کوہاٹ کی پشتون فیملیز میں پسند کی شادیاں ہوئیں، اس ’’بین الصوبائی ‘‘ رشتے داری سے دو قدم آگے بڑھاتے ہوئے ڈاکٹر معاذمسعود نے ’’بین الاقوامی ‘‘ رشتے داری کا اعزاز پایا ہے۔

About Author

Leave A Reply