نواب شاہ طالبہ حراسگی کیس: خبریں چلانے پر شرپسند عناصر نے صحافیوں کے خلاف مہم شروع کردی

0

حیدرآباد (ای این این ایس) نواب شاہ میں جنسی حراسگی کا شکار طالبہ کی خبریں چلانے پر کچھ نام نہاد عناصر نے صحافی اسماعیل ڈومکی  کے خلاف سوشل میڈیا پر مہم شروع کردی ہے اور ان کو دھمکیا دی جارہی ہیں۔ تفصیلات کے مطابق کچھ عناصر جن کی آئی ڈیز  پر زرداری لکھا ہوا ہے نے صحافی کے خلاف نازیبا الفاظ اور دھمکیوں والی پوسٹس شیئر کرنا شروع کر رکھی ہیں۔

دوسری جانب کچھ عناصر انہیں جان سے مارنے کی بھی دھمکیاں دے رہے ہیں۔ یاد رہے کہ بینظیر بھٹو یونیورسٹی نواب شاہ کی ایک طالبہ نے استاد اور وہ سی پر جنسی حراسگی کا الزام لگایا تھا جس کو نواب شاہ سے تعلق رکھنے والی صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر عذرا نے انکوائری رپورٹ سے پہلے ہی طالبہ کو جھوٹا قرار دیدیا تھا۔

بعد ازاں وزیر اعلیٰ سندھ کی جانب سے بنائی گئی کمیٹی نے بھی اساتذہ کو کلیئر قرار دیدیا ہے۔ تاہم لڑکی اب تک اس بات پر قائم ہے کہ اسے حراساں کیا گیا اور ان کے شعبے کے استاد نے بات نہ ماننے پر انہیں فیل کردیا۔

دریں اثناء صحافیوں  و صحافی تنظیموں نے اسماعیل ڈومکی کو تحفظ فراہم کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے دھمکیاں دینے والوں کے خلاف سخت کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

About Author

Leave A Reply