قومی ہیرواعتزازحسن کوسرکاربھول گئی، وعدے وفا نہ ہوئے، ورثاء کوصوبائی و وفاقی حکمران پوچھنے کو تیار نہیں

0

پشاور(ای این این)قومی ہیرو کا درجہ پانے والے شہید طالب علم اعتزاز حسن کی پانچویں برسی خاموشی سے گزر گئی۔ 6جنوری2014کو شہید طالب علم اعتزاز حسن نے گورنمنٹ ہائی اسکول ابراہیم زئی پر خود کش حملے کو ناکام بناکرسینکڑوں طلباء کی جانیں بچاکر سینکڑوں ماؤں کے گود اجڑنے سے بچالی تھی۔

شہید طالب کے خاندان والوں کا کہنا ہے کہ برسی پر خاموشی اختیار کرنے کی اصل وجہ یہ ہے کہ برسی میں شرکت کرنے کیلئے ہم نے حکومتی عہدیداروں اور منتخب عوامی نمائندوں کو مدعو کیا لیکن افسوس برسی میں شرکت تو دور کی بات ہے ابھی تک صوبائی اور مرکزی حکومتوں اور منتخب عوامی نمائندوں نے ہمارا حال تک پوچھنا گوارا نہیں کیا۔

حکومت نے اعتزاز حسن کی قربانی کو پس پشت ڈال کر ہمارے ساتھ جو وعدے کئے تھے ابھی تک پورا نہ ہو سکے۔  قومی ہیرو کا درجہ پانے والے اور تعلیم پر حملہ ناکام بنانے والے شہید اعتزاز حسن کی پانچویں برسی کا خاموشی سے گزر جانا حکومتی نمائندوں کا نظر انداز کرنا قابل افسوس امر ہے۔

About Author

Leave A Reply