قلندر کی مزار میں دھماکہ کی سہولت کاری پر دو مجرموں کو سزائے موت

0

کراچی (ای این این ایس) انسداد دہشت گردی عدالت نے سیہون بم دھماکہ سہولت کاری کیس کا فیصلہ سنادیا ہے۔
عدالت نے جرم ثابت ہونے پر کالعدم داعش کے دو کارندوں کو سزائے موت سنا دی۔
مجرمان میں نادر علی عرف مرشد اور فرحان عرف فاروق بروہی شامل ہیں۔
خیال رہے کہ 16 فروری 2018 میں لال شہباز قلندر کی مزار کے احاطے میں بم دھماکہ ہوا تھا۔جس میں 80 سے زائد افراد جانبحق ہوئے تھے۔
پبلک پراسکیوٹر محمد رضا کے مطابق مجرمون کا تعلق عالمی دہشت گرد کالعدم تنظیم داعش سے ہے۔
پولیس کے مطابق ملزم فرقان نے جوڈیشل مجسٹریٹ کے سامنے سہولت کاری کا اعتراف بھی کیا تھا۔

About Author

Leave A Reply