دہشتگرد “ان” سے طاقتور ہیں، مجرمان آج تک نہیں پکڑے گئے، ہم ظلم کے خلاف آواز بلند کرتے رہینگے: سردار اختر مینگل

0

کوئٹہ/ اوستا محمد( رپوٹ: منظور سومرو/ عدنان منگی)بلوچستان نیشنل پارٹی کے سربراہ  و رکن قومی اسیمبلی سردار اختر  مینگل نے کہا ہے کہ بلوچستان میں بدامنی اور قتل عام برداشت نہیں، حکمران بلوچستان کے لوگوں کو انسان سمجھیں۔  کوئٹہ میں ہزارہ برادری کے احتجاجی دھرنے سے خطاب رتے ہوئے  اختر مینگل نےکہا کہ حکمرانوں کی یقین دہانیوں کے باوجود کسی واقعے کے  مجرمان پکڑے نہیں گئی۔ بلوچستان میں بدامنی کے پیچھے کون ہیں کیامقتددر حلقے نہیں جانتے  بلوچستان میں سینکٹروں افراد شہید ہوئے لیکن کوئی پکڑا نہیں گیا، کیونکہ دہشتگرد ان سے بھی طاقتور ہیں۔

 حکمرانوں کو امن کیلئے یقین دہانیوں سے نکل کر عملی اقدام کرنا ہونگے۔ بلوچستان میں بسنے والے تمام لوگوں کا دکھ مشترکہ ہے بلوچستان میں بسنے والی اقوام کو انسان کی نگاہ سے دیکھا نہیں جاتا،  کوئٹہ کے بہادر لوگوں نے سخت موسمی حالات میں دھرنے دیئے ہزارہ برادری نے شھداء کی لاشیں رکھ کر کئی،کئی دن احتجاج کیا  مصیبت کی گھڑی میں حکمرانوں نے ہمیشہ مگر مچھ کے آنسو بہائے۔ عوام کے ساتھ کئے گئے وعدے ہمیشہ دھرے کے دھرے رہے

 حکمران کو معمولی مرض لگ جائے تو اپنا علاج اس ملک سے نہیں کراتے،   بلوچستان میں بسنے والے لوگ  نے کھبی حالات سے سمجھوتہ نہیں کیا ۔حکمران بلوچستان میں ہونے والی بدامنی سے اپنے آپ کو بری الزمہ نہ سمجھے انسانیت کے قتل عام کا زمہ دار وہاں کا حاکم ہوتا ہے۔

 بلوچستان میں قتل عام کے زمہ دار ماضی اور حال کے حکمران ہیں  دھرنے والوں کو منانے کیلئے بڑے بڑے وزراء آئیں گے لیکن عملی کام کون کرے گا کوئٹہ کی بارش سے زیادہ دھرنے والوں کو منانے والوں کے چہروں پر آنسو ہونگے  بلوچستان میں یقین دہانیوں کے باوجود امن کیلئے کوئی عملی کام ہونے والا نہیں  بلوچستان کے لوگوں کو صرف خدا وند تعالیٰ پر بھروسہ ہے ۔ بلوچستان کے گم شدہ لوگوں کی چیخوں کو ایوان تک پہنچایا اور آئندہ بھی ظلم کے خلاف آواز بلند کرتے  رہینگے۔

About Author

Leave A Reply