خود کش حملے میں مارے گئے  پی ٹی آئی رہنما اسراراللہ خان کے کیس میں امین گنڈہ پور و دیگر ملوث قرار

0

ڈیرہ اسماعیل خان (ای این این ایس) 16 اکتو بر 2013 کو عید الضحیٰ کے د ن خو د کش حملے میں شہید ہو نے والے پی ٹی آئی کے وزیر قا نو ن اسرار اللہ خان گنڈہ پور کے مقد مہ میں تحر یک انصاف کے ہی سا بق صو با ئی وزیر ما ل علی امین گنڈہ پور ، تحصیل ناظم ڈیر ہ علی امین کے بھا ئی عمر امین گنڈہ پور اور زا ہد الرحمان گنڈہ پور کو ملز ما ن نامزد کر دیا گیا  ہے۔ تینو ں خود کش حملے کے فنانسر ، سہولت کار اور منصو بہ ساز تھے ملز ما ن تک پہنچنے کیلئے سوا ئے پاک آرمی اور پولیس کے دو افسرا ن کے کسی نے میر ی مدد نہیں کی، حتیٰ کہ اسرار شہید کی پارٹی پی ٹی آئی کی حکومت خیبر پختونخواہ نے بھی میر ی کو ئی مدد نہیں کی۔

 سا بق وزیر دا خلہ چو ہدر ی نثا ر علی نے بھی ملاقات میں مدد کا وعد ہ کیا لیکن  وفا نہ کیا، جب کہ سابق  وزیر اعظم نواز شریف نے تو ملاقات کا وقت بھی نہیں دیا۔ ان خیالات کا اظہار  اسرار اللہ شہید اور سا بق صو با ئی وزیر زراعت اکرام اللہ خان گنڈہ پور کے بھا ئی ڈپٹی ڈائریکٹر ایف آئی اے انعا م اللہ خان گنڈہ پور نے    کلا چی میں اپنی رہائش گا ہ پر پر ہجو م پر یس کانفرنس سے خطا ب کر تے ہو ئے کیا۔

 انہوں نے بتا یا کہ اس حملے میں اسرار اللہ سمیت سات افراد شہید اور 13 زخمی ہو ئے تھے خود کش حملہ آور کو 50 لاکھ میں خریدا گیا تھا ،حملے کا ماسٹر مائنڈ امریکی ڈرو ن حملے میں جہنم واصل ہو چکا ہے ۔عید کے روز ہمارے پور ے خا ندا ن کو اڑا نے کی کوشش کی گئی اللہ نے دیگر خاندان وا لو ں کو بچا لیا انہوں نے کہا کہ یہ خود کش حملہ نہ مذہبی تھا اور نہ ذاتی دشمنی کا نتیجہ بلکہ یہ ایک سیا سی دہشت گر د ی تھی۔ علی امین گنڈہ پور کا خاندا ن 1985 سے 2013 تک الیکشن میں مسلسل ہما ر ے خاندا ن سے ہار رہے تھے جس کے بعد کلا چی چھوڑ کر ڈیر ہ سٹی میں انہوں نے الیکشن لڑا اور حا دثا تی طور پر جیت گئے۔

 انہوں نے کہا کہ شہید اسرار کی اپنی پارٹی کی حکومت نے بھی اس کیس میں کو ئی مدد نہ کی اب عمرا ن خا ن کی اصو ل پسند ی ایماندار ی کا پتہ چلے گا تو وہ ظالمو ں قاتلو ں کے خلاف ہیں یا اپنے دست راست علی امین کا ساتھ دیتے ہیں عمرا ن خا ن کو چاہیے کہ علی امین، اس کے بھا ئی عمر امین کو کیس میں نامزد ہو نے کے بعد پارٹی سے نکا ل دے اور لا تعلقی کا اعلان کر ے ۔

انہوں نے آئی جی پولیس خیبر پختونخوا ہ سے اپیل کی ہے کہ نامزد ملز ما ن کو فور ی طور پر گرفتار کر یں اور مزید تفتیش کیلئے آر پی او ، ڈی آئی خا ن کی سر بر اہی میں جے آئی ٹی تشکیل دیں جس میں ڈی ایس پی ظہور خا ن، آئی ایس آئی، آئی بی، سی ٹی ڈی کو شامل کریں اور ملزما ن کا نا م ای سی ایل میں ڈا لا جا ئے چیف جسٹس پاکستان میا ں ثا قب نثار سو موٹو نوٹس لیں اور مقد مہ فو جی عدا لت میں چلا یا جا ئے۔ سو ل سو سائٹی بھی ہماری مدد کر ے میڈیا جس طر ح پہلے مقدمہ میں میر ی مدد کر تا رہا ہے آئندہ بھی کرے یہ انسانی ہمدر دی کا معاملہ ہے ۔

About Author

Leave A Reply