ایم کیو ایم نے کراچی کے گردے تباہ، پی ٹی آئی نے آئی سی یو اور پی پی شہر کو تقسیم کر رہی ہے: مصطفیٰ کمال

0

کراچی(ای این این ایس) پاک سرزمین پارٹی (پی ایس پی) کے سربراہ سید مصطفیٰ کمال نے سندھ ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ کراچی کے لوگ پریشان ہیں کہ کس سے فریاد کریں۔ سٹی گورنمنٹ اور صوبائی حکومت دونوں نہیں سن رہی۔
میئر کراچی کہتے ہیں میرا مسئلہ نہیں ہے۔ وفاقی حکومت بیان دیتی ہے لیکن عمل نہیں کرتی۔ کراچی کی عوام اتنی مایوس پہلے کسی دور میں نہیں ہوئی۔ہمیں سمجھ نہیں آرہا کہ ہمارے مسائل کون حل کرے گا۔
انہوں نے سوال کیا کہ کیا ہم اقوام متحدہ میں جائیں یا پاکستان کا کوئی ادارہ ہماری بات سنے گا؟
کراچی والوں پر رحم کریں, نہ بجلی ہے نہ پانی ہے ذرا سی بارش پر پورا شہر تباہ ہوگیا ہے۔
کراچی تباہ ہو رہا ہے اور اس کے ساتھ پاکستان بھی تباہ ہو رہا ہے۔اس شہر کی کوئی داد رسی نہیں کر رہا ہے، جھوٹ بولتے ہیں کہ ان کے پاس اختیارات نہیں ہیں۔ ان کے پاس اتنے اختیارات ہیں کہ کچرہ اٹھا سکیں۔میئر کراچی خود کہتے ہیں کہ 15 ارب پورے آئے ہیں۔میئر کراچی کوئی 7 منصوبے مجھے دیکھائے جو اس نے بنائے ہیں۔
میئر کراچی سمیت ایسے لوگوں کا نام ای سی ایل میں ڈالنا چاہیے۔
انہوں نے مزید کہا کہ سندھ حکومت کہتی ہے کہ سندھ کی تقسیم نا منظور ہے، جبکہ ایم کیو ایم اپنی نا اہلی چھپانے کیلئے کہتی ہے سندھ کو دو حصوں میں تقسیم کرو۔ہم نے بھی سندھ کی تقسیم کی خلاف بات کی ہے، لیکن سندھ حکومت خود کراچی کو تقسیم کر رہی ہے۔
کراچی میں 6 اضلاع بنائے گئے ہیں، ابھی اور بھی اضلاع بنانے کی تیاری ہو رہی ہے۔ یہ اضلاع بنانا کراچی کی تقسیم ہے۔ کراچی کی تقسیم بھی ہم نہیں کرنے دیں گے۔ سندھ حکومت نے کے پی کے سے افسر کو ڈی سی سینٹرل لگا دیا ہے۔
مجھے اب حکومتوں سے کوئی امید نہیں رہی ہے۔ پاکستان کے ریاستی ادارے کراچی کے معاملات کو خود دیکھیں۔کراچی کے لوگوں کو دیوار سے لگایا گیا ہے، کراچی کو علاج کی ضرورت ہے اور اس کا بہتر علاج صرف ہم کر سکتے ہیں۔ ایم کیو ایم نے کراچی کے گردے ہی تباہ کر دیے، تحریک انصاف نے کراچی کو آئی سی یو میں منتقل کردیا۔
دس سال سے کچرہ نہیں اٹھایا جا رہا ہے، بدکردار لوگوں کی حکمرانی ہے۔ 26 دنوں میں شہر ٹھیک کرنے والی بات پرانی ہو گئی ہے، سندھ کی تقسیم کسی جو منظور نہیں۔

About Author

Leave A Reply